اسلام آباد میں ظلم اوربربریت کی انتہا، لرزہ خیز واقعہ،دو سالہ معصوم بچی کو زیادتی کا نشانہ بناڈالاگیا،ملزم گرفتار

اسلام آباد (آن لائن ) بھارہ کہو ظلم اوربربریت کی انتہا، آسمان گرا نہ زمین پھٹی، مصوم بچی بھی حوس کے پجاریوں سے نہ بچ سکے دو سالہ بچی جنسی تشد د کا شکار والدین شدتِ غم سے نڈھال علاقہ میں خوف وہراس، اہلِ حلاقہ کا ملزم کو سر بازار پھانسی دینے کا مطالبہ، تھانہ بھارہ کہو پولیس نے ملزم کو گرفتار کر کے حوالات میں بند کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ بھارہ کہو کی حدود محلہ قائم دین کے رہائشی لیاقت علی ولدمحد گل باذکی دو سالہ مصوم بیٹی پڑوس میں آئے ہوئے نئے کرایہ داروں کے بیٹے
ملزم محمدگل کے ہاتھوں جنسی تشدد کا نشانہ بنی بچی کے ولد نے میڈیا سے باتکرتے ہو ئے بتایا آج دن گیارہ بجے کے دوران بچی گھر سے باہر نکلی لیکن کافی ٹائم گزرنے کے بعد بچی واپس گھر نہ آئی بچی کی والدہ بچی کو تلاش کرنے ساتھ والے گھر میں گئی جہاں سے بچی روتی ہو ئی گھر سے باہر نکلی بچی کی حالت بہت خراب تھی بچی کی والد نے بتایا کہہ ذیادتی کرنے والا لڑکا محمد گل ولد ذیارت گل جس کی عمر تقریباً 20سال ہے بچی کی والدہ کو دیکھ کر لڑکا واش روم میں گھس گیا بچی کی والدہ نے اپنے شوہر کو بلا لیا اور محلہ والوں کو بھی بلایا اور پولیس کو اطلاع دی جو کے پولیس نے برقت کارروائی کرکے ملزم محمد گل کو گرفتار کر لیا۔

loading…

اپنا تبصرہ بھیجیں